Thursday, October 22, 2015

مولانا رابع حسنی ندوی کی قابل توجہ و تقلید نصیحت Maulana Rabey Hasani Nadawi advice to the nation

ولانا رابع ندوی کی نصیحت
مسلم پرسنل لاء بورڈ کے لائق صداحترام صدرمولانا سیدرابع حسنی ندوی نے ایک مخصوص نظریہ حیات پورے ملک پر تھوپے جانے کی کوششوں کے خطرات سے آگاہ کرایا ہے اورباہم مروت کی پرخلوص تلقین کی ہے۔ مولانا محترم نے جن قابل تقلید جذبات اوراحساسات کا اظہارفرمایا ہے ان کو مختلف زبانوں میں پورے ملک میں پھیلانے کی ضرورت ہے تاکہ اس جھوٹ پروپگنڈے کا ازالہ ہوسکے کہ مدارس اورہمارے علماء اہل وطن سے منافرت کی تلقین کرتے ہیں۔ اس جھوٹے پروپگنڈے کا اثر یہ ہوا ہے کہ میں ہمارے بزرگ علماء، صلحا اورصوفیاء نے زاید از ہزارسال پیار،محبت، خدمت خلق کی جو سوغات دی، قول اورفعل کی یکسانیت سے جو پیغام دیا، اپنی سادگی پسندی سے جو وقار حاصل کیا ،اس کو بھلایا جارہا ہے۔ اوروں کی تو بات ہی کیا کریں مروت اور اختلاف کو برداشت کرنے ، دوسرے کی رائے کا احترم کرنے کاامتیاز تو خود ہمارے اپنے کرداروں سے مٹتا جا رہا ہے۔ جو صوفیاء اورمشائخ کی نمائندگی کا دم بھرتے اوران کے نام پر تنظیمیں کھڑی کئے ہوئے ہیں وہ خود اپنے دینی بھائیوں کے خلاف عوام کے ذہنوں میں زہرگھولتے پھرتے ہیں۔حضرت مولانا کی زیرسرپرستی پرسنل لاء بورڈ بھی بعض معاملات کو اسطرح اٹھارہا ہے جس سے فرقہ ورانہ محاذ آرائی کی بوآتی ہے۔ اس صورتحال میں ہمارے لئے بس ایک ہی راستہ ہے کہ ہم اپنی صفوں کو درست کریں۔ اتحاد کا نعرہ لگانا فضول اورغیر حقیقی ہے۔ صرف باہم مروت اور رائے ومسلک کے احترام کی طرف بلائیں۔ ہماری زندگی میں یہ کوششیں بارآور ہوں یا نہ ہوں، اللہ کے روبرو سرخروئی تو حاصل ہوہی جائیگی۔
مولانا نظام الدین مرحوم
مولانا نظام الدین ایک معروف بزرگ ہستی تھے ۔مرحوم قدیم دورکی یادگار تھے۔ ان کے انتقال پر ہم ان کے تمام متعلقین ، متوسلین اورعقیدت مندوں کو تعزیت پیش کرتے ہیں ۔اللہ تعالیٰ مرحوم کی حسنات کو شرف قبولیت بخشے اوربشری کمزوری سے جو سئیات سرزد ہوگئی ہوں ان سے درگزرفرمائے۔ اورملت ان مسائل سے محفوظ رہے جو عام طورسے کسی بڑے آدمی کی وفات کے بعد خودغرضوں کی ریشہ دوانیوں کی وجہ سے پیداہوجاتی ہیں ۔ آمین۔

No comments: