Thursday, December 18, 2014

Call them ZALIMAN and not TALIBAN

ان کو طالبان نہیں ظالمان کہنا چاہئے
سید منصورآغا
گزشتہ منگل پیشاور میں جو درندگی کا واقعہ پیش آیا اس نے پتھردل انسانوں کے دلوں کو بھی درد اور کرب سے بھردیا اور بے اختیار آنکھیں بھرآئیں اور آنسورواں ہوگئے۔ ہزاروں لاکھوں زبانوں سے ایک ساتھ ان بدبختوں کے لئے بددعا نکلی جنہوں نے ایسی شیطانی حرکت کی جس کو دیکھ کرہلاکو،ہٹلراور فرعون مصر جیسے سفاک بھی شرمندہ ہوجاتے۔ ایسے لوگوں کو طالبان نہیں،ظالما ن کہا جانا چاہئے۔ان کا اسلامیت سے تو کیا انسانیت سے بھی کچھ واسطہ نہیں۔ 
ہمارے پاس اس سانحہ کی مذمت کے لئے مناسب الفاظ نہیں۔ ہمارے پاس ہی کیا، دنیا کی کسی بھی لغت میں ایسے الفاظ نہیں ہونگے۔ ہم ظلم کے شکار خاندانوں اور سارے انسانوں کی خدمت میں اپنی تعزیت پیش کرتے ہیں۔ اس موقع پر وزیراعظم ہند نریندرمودی نے جن الفاظ میں اورجس پرسوز انداز میں وزیراعظم پاکستان سے تعزیت کی ہے،اس کی تائید کرنا ہم اپنا انسانی فریضہ سمجھتے ہیں۔ ظالمان پاکستان کی اس طرح کی حرکتوں نے دراصل اسلام کے بہی خواہ ان ہزارہا انسانوں کی دعوتی کام پر منفی اثرڈالا ہے جو اپنی زبان،قلم اور عمل سے اسلام کی سچی تصویر دنیا کے سامنے پیش کرتے ہیں۔ یہ اتنا بڑا جرم ہے جس کو نہ انسان معاف کرسکتے ہیں اور نہ وہ ذات باری تعالیٰ معاف فرمائیگی جو غفارہے، رحیم اور کریم ہے، مگر اس کا عدل وانصاف اس کی تمام صفات کی اساس ہے۔بیشک ان ظالموں کو اوران کے سفید پوش آقاؤں کو بخشا نہیں جاسکتا۔ بس یہ دعا کی جاسکتی ہے کہ اللہ ان بدطینتوں کو راہ راست دکھائے۔ آمین۔

No comments: